وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی، اصلاحات اور خصوصی اقدامات اسد عمر نے جمعہ کو اعلان کیا کہ گرین لائن منصوبے کا بقیہ ٹریک ایک سال میں مکمل کر لیا جائے گا۔
اسد عمر کے مطابق یہ منصوبہ 35 ارب روپے کی لاگت سے مکمل کیا جائے گا، جس پر سندھ اور وفاقی حکومتوں نے اتفاق کیا ہے۔
ٹکٹ کی قیمت صوبائی حکومت مقرر کرے گی اور سندھ حکومت نے وفاقی حکومت سے کہا ہے کہ ٹکٹ تین سال تک برقرار رکھے۔
وزیر کے مطابق سندھ حکومت پہلے تین سال ریونیو اکٹھا کرے گی اور معاہدے کے مطابق اسے وفاقی حکومت کے حوالے کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ مسافروں کو سبسڈی وفاقی حکومت فراہم کرے گی۔
انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ ملک کے لیے مالی طور پر فائدہ مند ہو گا اور اس کا کرایہ 15 روپے سے لے کر 55 روپے تک ہو گا۔ پراجیکٹ کی عملداری کو یقینی بنانے کے لیے اسد نے صوبائی حکومت کو سالانہ بنیادوں پر کرائے کے چارجز کا جائزہ لینے کی تجویز دی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *
You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>