حکومت نے منگل کو بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں اضافے کے باعث ایندھن کی قیمت میں 12.03 روپے فی لیٹر اضافہ کرکے عوام کو حیران کردیا۔
بین الاقوامی مارکیٹ میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ڈرامائی طور پر اضافہ ہوا ہے اور اب وہ 2014 کے بعد اپنی بلند ترین سطح پر ہیں۔ سال کے آغاز سے اب تک بلا تعطل اضافے کے باوجود وزیراعظم عمران خان نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کا آخری جائزہ 31 جنوری 2022 تک ملتوی کردیا، اور اوگرا کی سمری کے خلاف زور دیا گیا،” فنانس ڈویژن نے ایک بیان میں کہا۔
فنانس ڈویژن کے مطابق، حکومت نے 0% سیلز ٹیکس کا بھی اندازہ لگایا اور متوقع رقم کے مقابلے میں صارفین کو “ریلیف” فراہم کرنے کے لیے لیوی کو کم کیا۔
فنانس ڈویژن کے مطابق ریلیف کے نتیجے میں حکومت کو ہر دو ہفتوں میں تقریباً 35 ارب روپے کا نقصان ہوا ہے۔
وزیراعظم نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کے پندرہ روزہ جائزے میں تیل کی بین الاقوامی قیمتوں میں تبدیلی کے جواب میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی درخواست کا جائزہ لیا ہے۔” پیٹرولیم کی قیمتوں میں اضافے کے باوجود، پیٹرولیم چارج اور سیلز ٹیکس کو کم سے کم رکھا گیا ہے۔

وزیراعظم آزادجموں وکشمیر سردار عبدالقیوم نیازی کی زیر صدارت محکمہ سیاحت کا جائزہ اجلاس، اجلاس میں سیاحت کے فروغ کیلئے مظفرآباد میں میوزیم بنانے، آزادکشمیر میں ایکو ٹورازم کے فروغ کیلئے تاؤ بٹ، منگلا جھیل، کیرن بیلا ودیگر مقامات پر خصوصی سپاٹس بنانے، ستمبر تک میرپور میوزیم کواورمظفرآباد لال قلعہ کی تزئین آرائش کا کام مکمل کرنے کا فیصلہ۔
محکمہ سیاحت کی استعداد کار بڑھانے کیلئے200ملین روپے دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ ثقافتی ورثہ کو محفوظ بنانے کیلئے نئے منصوبے شروع کرنے کا فیصلہ۔ کشمیر کی تاریخ، ثقافت اور کلچر کو محفوظ بنانے کے لیے وزیراعظم نے محکمہ سیاحت کو ہدایت کی کہ جلد منصوبے مرتب کر کے متعلقہ فورم سے منظوری حاصل کی جائے۔
جبکہ وزیراعظم جلد مظفرآباد میں کٹھہ سیماری کے مقام پر سیاحتی مرکز کا افتتاح کر یں گے۔اجلاس میں وزیراعظم آزادکشمیر کی ہدایت پر سیاحت کے فروغ کیلئے ساردہ،تتہ پانی سمیت دیگر مقامات پر نئے سیاحتی سپاٹس بنانے جبکہ تمام اضلاع میں تفریحی پارکس بنانے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔

آزادکشمیر کے عوام کو علاج معالجہ کی معیاری اور مفت طبی سہولیات کی فراہمی کے لیے کشمیر آرفن ریلیف ٹرسٹ کے ساتھ مل کر جدید ترین ہسپتال تعمیر کیا جائے گا
یہ ہسپتال آزادکشمیر کی تاریخ کا پہلا ہسپتال ہو گا جہاں ہر خاص و عام کو علاج معالجہ کی جملہ سہولیات مفت مہیا کی جائیں گی۔