پاکستان کے ممتاز ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبدالقدیر خان اتوار کو ان کی صحت بگڑنے کے بعد انتقال کر گئے۔
ڈاکٹر اے کیو خان ​​کو پاکستان کے ایٹمی پروگرام کا باپ مانا جاتا ہے اور انہیں مسلم دنیا کا پہلا ایٹمی ہتھیار بنانے کے لیے گھر میں ہیرو کے طور پر سراہا جاتا ہے۔
ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی صحت ہفتے کی رات سے خراب ہونا شروع ہوئی ، اور انہیں اتوار کی صبح 6 بجے ایمبولینس میں کے آر ایل ہسپتال لے جایا گیا۔
ذرائع کے مطابق ایٹمی طبیعیات دان کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا تھا اور اسے ہسپتال لے جایا گیا۔ تاہم ، اس کی حالت نے بدترین موڑ لیا جب اس کے پھیپھڑوں سے خون بہنا شروع ہوا۔
ڈاکٹروں نے معروف سائنسدان کی جان بچانے کی ہر ممکن کوشش کی ، لیکن وہ ناکام رہے ، اور وہ صبح 7:04 بجے ڈاکٹر عبدالقدیر خان کے پھیپھڑوں کے ٹوٹنے کے بعد انتقال کر گئے ، ڈاکٹروں کے مطابق۔
ہسپتال انتظامیہ ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی لاش کو ان کے E-7 گھر پہنچانے کا انتظام کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ ان کے اہل خانہ نے اعلان کیا ہے کہ ان کی نماز جنازہ فیصل مسجد اسلام آباد میں سہ پہر 3:30 بجے ادا کی جائے گی۔
وزیر داخلہ شیخ رشید نے جیو نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے سائنسدان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر قدیر کی جان بچانے کے لیے تمام ضروری طریقہ کار بنائے گئے تھے۔
رشید نے کہا کہ سائنسدان کو پاکستان میں ان کی شراکت کے اعزاز میں سرکاری جنازہ دیا جائے گا۔
وزیر داخلہ ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے مزید کہا کہ انہوں نے تعلیمی کوششوں میں ان کی بہت مدد کی تھی اور پاکستان کی تاریخ کے ایک مشکل لمحے میں ایک بصیرت مند رہنما رہے تھے۔
وہ محسن پاکستان ہے ، “رشید نے اعلان کیا۔
ڈاکٹر عبدالقدیر خان راتوں رات قومی ہیرو بن گئے ، نہ صرف پاکستان بلکہ پوری اسلامی دنیا میں ، جب پاکستان نے مئی 1998 میں ایٹمی تجربات کرکے بھارت کو مناسب جواب دیا۔ ٹیسٹ کے نتیجے میں ہتھیار پاکستان کے ایٹمی ہتھیاروں کی بدولت بھارت کی جارحیت کو روک دیا گیا ہے۔

ڈاکٹر عبدالقدیر خان کو وزیراعظم عمران خان نے پاکستانی عوام نے “قومی بت” قرار دیا۔

Authoritatively administrate long-term high-impact e-business via parallel web services. Synergistically synergize equity invested infrastructures whereas integrated infrastructures. Globally whiteboard customer directed resources after multimedia based metrics. Assertively strategize standardized strategic theme areas vis-a-vis impactful catalysts for change. Details

Authoritatively administrate long-term high-impact e-business via parallel web services. Synergistically synergize equity invested infrastructures whereas integrated infrastructures. Globally whiteboard customer directed resources after multimedia based metrics. Assertively strategize standardized strategic theme areas vis-a-vis impactful catalysts for change. Details

Authoritatively administrate long-term high-impact e-business via parallel web services. Synergistically synergize equity invested infrastructures whereas integrated infrastructures. Globally whiteboard customer directed resources after multimedia based metrics. Assertively strategize standardized strategic theme areas vis-a-vis impactful catalysts for change. Details

Authoritatively administrate long-term high-impact e-business via parallel web services. Synergistically synergize equity invested infrastructures whereas integrated infrastructures. Globally whiteboard customer directed resources after multimedia based metrics. Assertively strategize standardized strategic theme areas vis-a-vis impactful catalysts for change. Details

Authoritatively administrate long-term high-impact e-business via parallel web services. Synergistically synergize equity invested infrastructures whereas integrated infrastructures. Globally whiteboard customer directed resources after multimedia based metrics. Assertively strategize standardized strategic theme areas vis-a-vis impactful catalysts for change. Details

Authoritatively administrate long-term high-impact e-business via parallel web services. Synergistically synergize equity invested infrastructures whereas integrated infrastructures. Globally whiteboard customer directed resources after multimedia based metrics. Assertively strategize standardized strategic theme areas vis-a-vis impactful catalysts for change. Details