بطور پاکستانی ہم مغربی طور طریقوں سے اختلاف کرتے ہیں ان کے پہننے اوڑھنے کے انداز ان کا رہن سہن کا طریقہ سب پر ہی تو اعتراض ہوتا ہے ہمیں
پھر آخر کیوں ہم خود وہاں جاکر بس نہ چاہتے ہیں؟ ہم کیوں اپنے بچوں کو وہاں پڑھانا چاہتے ہیں؟ کیونکہ ہم وہاں دودھ گائے کا ملتا ہے اور یہاں کیمیکل کا وہاں پرچی سسٹم نہیں چلتا اور یہاں پرچی کے علاوہ کام نہیں ہوتا غدار معاشرے میں رہتے ہیں ہم خود منافق ہیں

وہاں بچے سکول جاتے ہیں تو محفوظ ہوتے ہیں یہاں ڈر ہی لگا رہتا ہے کہ شاید کوئی ہمارا بچہ نہ اٹھا کر لے جائےوہاں حرام جانور کا گوشت بھی ایک نمبر ملتا ہے اور یہاں حلال جانور کا گوشت بھی حرام کر کے بیچا جاتا ہے وہ جو ہے جیسے ہی سامنے ہیں اور ہم بظاہر تو شرافت کا لبادہ اوڑھے ہوئے ہیں لیکن اندر سے بہت منافق ہے

ہم اپنے آپ کو آخر کب درست کریں گے ؟دوسروں پر انگلیاں اٹھانے سے کب باز آئیں گے؟

بظاہر تو کوئی بھی تفریح نہیں ہے پاکستان میں زیادہ سے زیادہ یہی ہے کہ ہم اپنے گھر والوں کے ساتھ جا کر کھانا کھا لیں لیکن پھر بھی کچھ دنوں بعد خبر چلتی ہے کہ فلاں ریسٹورنٹ پر گدھے کا گوشت پکا کر کھلایاجاتا تھا. یا پھر ایکسپائر چیزیں کھلائی جاتی تھی

بچوں کے کھانے کی چیزیں تک ناقص مواد سے بنائی جاتی ہیں جن کو کھا کر نہ جانے کتنے بچے ہر سال دنیا سے چلے جاتے ہیں. کتنے بھائی شوہر باپ اپنی بہنوں بیٹیوں اور بیویوں کا جائیداد میں حصہ کھا جاتے ہیں

افسوس کہ ہم ایک مردہ قوم ہیں
مغرب میں تو ایک کم لباس کے ساتھ بھی ایک عورت بیٹی بہن محفوظ ہوتی ہے. وہاں آپ کی مرضی کے بنا آپ کو کوئی ہاتھ نہیں لگا سکتا وہاں کوئی بھائی یا شوہر اپنی بہن بیوی کا حق نہیں کھا سکتا.

پھر صرف مغرب کو بری چیزوں کو دیکھ کر ہی فیصلہ قائم کرنا اور اختلاف کرنا کیا صحیح ہے؟؟؟ آج جو ہمارے معاشرے میں سب سے زیادہ چیز پائی جاتی ہے وہ ہے بے حیائی. ہم کیوں صرف مغرب کی بری چیزوں کو ہی دیکھتے ہیں اور اپناتے ہیں. اب ہمیں مغربی معاشرہ وہ سب کچھ بھی سکھاتا ہے جو ہمیں اسلام سکھاتا تھا اور بتاتا تھا .ہمیں سب سے پہلے اپنا قبلہ درست کرنا پڑے گا…..

4 comments

  • Nayen
    Nayen
    Reply

    directed sources with best-of-breed technologies. Efficiently monetize global ROI without premium infrastructures.

    • trendymag
      trendymag
      Reply

      Completely exploit magnetic infrastructures through future-proof methods of.

  • trendymag
    trendymag
    Reply

    Phosfluorescently evolve magnetic meta-services through an expanded array of \”outside the box\” thinking. Progressively envisioneer plug-and-play architectures.

  • trendymag
    trendymag
    Reply

    Dramatically deliver premium architectures rather than interactive core competencies.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *
You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>